پی ٹی آئی حکومت کی خیبر پختونخوا میں1 ہزار سے زائد سوشل میڈیا انفلیونسرز کی بھرتی

پشاور: خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف کی حکومت نے اپنے سیاسی موقف کے دفاع اور جعلی خبروں کا مقابلہ کرنے کے لیے سوشل میڈیا انفلیونسرز بھرتی کیے ہیں جن کی تربیت جاری ہے۔دستاویز کے مطابق خیبر پختونخوا میں1 ہزار سے زائد سوشل میڈیا انفلیونسرز بھرتی کیے گئے، مختلف اضلاع سے ایک ہزار 96 میڈیا انفلیونسرز بھرتی کیے گئے۔دستاویز کے مطابق بھرتی ہونے والے میڈیا انفلیونسرز میں 37 خواتین بھی شامل ہیں، منصوبے کے لیے 87 کروڑ روپے مختص کیے گئے تھے۔سرکاری دستاویز کے مطابق نظرثانی شدہ پی سی ون میں رقم 73 کروڑ 60 لاکھ روپے کی گئی۔

پروجیکٹ منیجر زر علی کا کہنا ہے کہ سوشل میڈیا انفلیونسرز کو ایک سال کے کنٹریکٹ پر رکھا گیا ہے، جنہیں ماہانہ 25 ہزار روپے تنخواہ دی جائے گی، انفلیونسرز حکومت کی پالیسیوں اور کارکردگی کو سوشل میڈیا پر اجاگر کریں گے۔زر علی نے کہا کہ انفلیونسرز حکومت کے خلاف منفی پروپیگنڈا اورجھوٹی خبروں کا مقابلہ کریں گے، کورونا، پولیو سے متعلق آگاہی بھی میڈیا انفلیونسرز کی ذمہ داری ہوگی، میڈیا انفلیونسرز حکومت کے مجوزہ اقدامات پر عوام کی رائے لیں گے۔